Warning: "continue" targeting switch is equivalent to "break". Did you mean to use "continue 2"? in /home/ch51dm/public_html/templates/interactive/lib/menu/GKBase.class.php on line 114

Warning: "continue" targeting switch is equivalent to "break". Did you mean to use "continue 2"? in /home/ch51dm/public_html/templates/interactive/lib/menu/GKHandheld.php on line 76
یہ کوئی طریقہ ہے؟ ہم یہاں ذلیل و خوار ہو گئے ہیں

یہ کوئی طریقہ ہے؟ ہم یہاں ذلیل و خوار ہو گئے ہیں

سیالکوٹ ( نیوز ڈیسک) فردوس عاشق اعوان سے تکرار کے بعد اسسٹنٹ کمشنر سونیا صدف کا ردعمل۔ تفصیلات کے مطابق سیالکوٹ کی اسسٹنٹ کمشنر سونیا صدف کی ایک اور ویڈیو سامنے آئی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ ویڈیو گزشہ روز پیش آئے تکرار کے واقعے کے بعد ہی ریکارڈ کی گئی تھی۔

ویڈیو میں سونیا صدف نے فردوس عاشق اعوان کی جانب سے غیر مناسب انداز میں گفتگو کیے جانے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ یہ کوئی طریقہ ہے؟ ہم یہاں ذلیل و خوار ہو گئے ہیں، صبح شام یہیں ہوتے ہیں۔
گرمی ہے اس لیے پھل خراب ہوگئے، آرام سے بھی بات کی جا سکتی ہے۔ دوسری جانب وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار کی معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ جو اے سی سے باہر نہیں نکل سکتا اسے عوامی نوکریاں کرنی ہی نہیں چاہیں، جو بھی افسر عوام کے پیسے سے تنخواہ لیتا ہے وہ جوابدہ ہے جو افسر عوام کی خدمت نہیں کر سکتا اسے نوکری چھوڑ دینی چاہیے۔
تحریک انصاف کی خاتون رہنما کا مزید کہنا ہے کہ وزیراعلی عثمان بزدار نے سیالکوٹ واقعہ کی رپورٹ طلب کر لی ہے اور اس حوالے سے غیر جانبدارانہ انکوائری کی ہدایت کی ہے۔اس واقعہ کی ہر پہلو سے تحقیقات ہوں گی اور وزیراعلی عثمان بزدار کو انکوائری رپورٹ پیش کی جائے گی۔ جو خواتین عوام کی خدمت کے لئے ایئرکنڈیشنڈ سے باہر نہیں نکل سکتیں تو ان کو چاہیے کہ وہ اس نوکری کی بجائے کوئی اور آسان راستہ اختیار کرلیں ۔
رمضان بازار سیالکوٹ میں عوامی ریلیف سے جڑا معاملہ بدنظمی کا شکار ہوا اور چیف سیکرٹری پنجاب کو حقائق مسخ کر کے بتائے گئے۔میں نے پنجاب کے مختلف علاقوں کے رمضان بازاروں کا دورہ کیا۔ کہیں ایسا رویہ دیکھنے کو نہیں ملا۔ ہر شہر میں چینی دوکلو جبکہ سیالکوٹ میں ایک کلو فی صارف دی جارہی تھی۔جہاں کوتاہی ہو نشاندہی وہاں ہی کی جاتی ہے۔
معاون خصوصی نے کہا کہ عوام کو چینی کے لئے لائنوں میں کھڑا کر کے عوامی استحصال پر وزیراعلی نے ناپسندیدگی کا اظہار کیا ہے۔ حکومتی ایس او پیز پر اگر کہیں عملدرآمد نہیں ہو تا تو عوامی نمائندے جوابدہ ہیں۔ فردوس عاشق اعوان کا مزید کہنا ہے کہ حکومت کے باقی ساتھیوں کو اس معاملے میں نہیں بولنا چاہیے تھا۔ ہم نے جان بوجھ کر اس معاملے پر خاموشی اختیار کی۔
کچھ چینلز کے بقول پروٹوکول نہ ملنے پر میں نے برہمی کا اظہار کیا۔ اس بات میں کوئی حقیقت نہیں۔ مجھے پروٹوکول کی نہیں بلکہ انڈر19کو پروٹوکول کی ضرورت ہے۔ حکومت نہیں حکومت کے کام بولتے ہیں۔ افسر شاہی کے بھی اعمال بولنے چاہئیں۔ رمضان بازار عوام کی بہتری کے لئے لگائے گئے ہیں ان کا مقصد بیورو کریسی کو نیچا دکھانا ہرگز نہیں۔ اگر عوامی نمائندے عوام کے سامنے جوابدہ ہیں تو بیوروکریسی بھی جوابدہ ہے۔
بیوروکریسی اور عوامی نمائندے دونوں حکومت کے اہم ترین ستون ہیں۔ دونوں کا مقصد عوام کو ریلیف دیناہے۔ حکومت کا مقصد عوام کے دکھوں کا مداوا ہے۔ جو عوام کی بہتری کے راستے میں کھڑا ہو گا وہ عمران خان کے مشن سے غداری کرے گا۔حکومت کا بیوروکریسی سے کوئی جھگڑا نہیں۔ ہم دونوں ایک ہی کشتی کے مسافر ہیں۔ ہماری کوئی ذاتی لڑائی یا دشمنی نہیں۔ ہم دونوں عوامی بہتری کے لئے کام کر رہے ہیں۔