60

پنجاب اور خیبرپختونخوا میں آج سے تعلیمی ادارے کھل گئے

پنجاب اور خیبرپختونخوا میں آج سے تعلیمی ادارے کھل گئے۔ اسکولوں میں 50 فیصد حاضری فارمولے پر عملدرآمد، طلبا اور عملے کیلئے ایس او پیز پر عملدرآمد کیا جائے گا۔

محکمہ سکول اور ہائر ایجوکیشن نے الگ الگ نوٹیفکیشن میں تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کیا۔ کالجز اور یونیورسٹیز کو بھی کھولنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

ادھر ملک بھرمیں بغیر ویکسی نیشن کے ٹرینوں میں سفر پر آج سے پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ 15 ستمبر تک کم از کم ایک ڈوز اور 15 اکتوبر تک مکمل ڈوز لگوانے والے مسافروں کو سفر کرنے کے اجازت ہوگی۔

دوسری جانب پنجاب کے 15 میں سے 10 اضلاع میں مکمل اور پانچ اضلاع میں 50 فیصد سواریوں کے ساتھ پبلک ٹرانسپورٹ کو بارہ روز بند رکھنے کے بعد کھول دیا گیا۔ لاہور، فیصل آباد، ملتان، سرگودھا اور گجرات میں پچاس فیصد سواریاں بٹھانے کی اجازت دی گئی ہے۔ باقی تمام اضلاع میں مکمل طور پر 100 فیصد سواریوں کے ساتھ پبلک ٹرانسپورٹ چلانے کی اجازت دی گئی ہے۔

کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر چار ستمبر سے پبلک ٹرانسپورٹ کو بند کیا گیا تھا۔ اب ایک ہفتے کیلئے پانچ اضلاع کو پچاس فیصد سواریوں کی اجازت دی گئی ہے۔ 22 ستمبر کے بعد ان پانچ اضلاع کے حوالے سے فیصلہ کیا جائے گا۔

علاوہ ازیں پنجاب کے منتخب اضلاع میں لاک ڈاؤن کی تفصیلات جاری کر دی گئیں۔ زیادہ شرح والے علاقوں لاہور، فیصل آباد، ملتان، سرگودھا اور گجرات میں 22 ستمبر تک لاک ڈاؤن نافذ ہوگا۔ کاروباری مراکز رات 8 بجے تک بند ہوں گے۔ ہفتے میں دو روز جمعہ اور ہفتے کے دن چھٹی ہوگی۔

کم شرح والے اضلاع میں 16 سے 30 ستمبر تک درج ذیل پابندیاں نافذ رہیں گی۔ مارکیٹ اور بازاروں کے 10 بجے تک اوقات کار رہیں گے۔ ہفتے میں صرف ایک روز چھٹی ہوا کرے گی۔ ان ڈور اور آؤٹ ڈور ڈائننگ رات 11:59 تک جبکہ ان ڈور ڈائننگ کی اجازت صرف ویکسی نیٹڈ افراد کو ہوگی۔ مزارات پر 30 سال سے زائد عمر کے ویکسی نیٹڈ شہری ہی جا سکیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں