0

ہفتہ وار بھرپور ورزش ہائی بلڈ پریشر مریضوں کیلئے فائدہ مند

کیرولینا: ایک نئی تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ ہفتے میں کم از کم ایک بار بھرپور ورزش ہائی بلڈ پریشر کے شکار افراد میں ڈیمنشیا کے خطرے کو کم کر سکتی ہے۔امریکی میڈیا کے مطابق ‘جرنل آف دی الزائمرز ایسوسی ایشن’ میں شائع ہونے والی ایک تحقیق میں ماہرین نے 9300 افراد کا مطالعہ کیا جس میں انہیں معلوم ہوا کہ جو لوگ ہر ہفتے بھرپور جسمانی سرگرمیوں میں حصہ لیتے ہیں ان میں ہائی بلڈ پریشر کا خطرہ کم ہوتا ہے۔ تاہم، ذہنی پسماندگی اور ڈیمنشیا کی شرح کم تھی۔بھرپور جسمانی سرگرمی میں پیدل سفر، دوڑنا، تیز سائیکل چلانا، تیراکی، رسی کودنا اور باغبانی شامل ہیں۔کیرولینا میں ویک فاریسٹ یونیورسٹی سکول آف میڈیسن میں داخلی ادویات کے اسسٹنٹ پروفیسر، سرکردہ محقق ڈاکٹر رچرڈ کاز وے، ایم ڈی نے کہا، “کلینیکل ٹرائل میں، ہم نے پایا کہ جسمانی ورزش فٹنس سے بڑھ کر بہت سے فوائد فراہم کرتی ہے، جس میں بلڈ پریشر کو کم کرنا بھی شامل ہے۔” بشمول مجموعی صحت کو بہتر بنانا اور دل کی صحت اور علمی صلاحیتوں کے بگاڑ میں تاخیر۔انہوں نے مزید کہا کہ یہ نئی تحقیق لوگوں کو اس اہم نکتے کی طرف بلاتی ہے کہ مذکورہ بالا تمام فوائد کے حصول کے لیے کتنی ورزش کی ضرورت ہے۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں