0

خاتون طالبعلموں کو سیاہ فام لڑکی پر حملہ کرنے کے لیے مسلسل اکساتی رہی

طالب علموں کو اسکول کے باہر سیاہ فام لڑکی پر حملہ کرنے پر اکسانے والی خاتون کو جیل بھیج دیا گیا۔ایشفورڈ، سرے میں گزشتہ سال 6 فروری کو برطانیہ کے تھامس نیویٹ کالج کے باہر لڑائی کی ایک ویڈیو سامنے آئی تھی، جس میں طالبات کو ایک سیاہ فارم لڑکی پر حملہ کرنے کی ترغیب دی گئی تھی، جسے سوشل میڈیا پر پوسٹ کیا گیا تھا۔ چلا گیا تھا40 سالہ خاتون وینی کونرز اس دوران حملہ آورں کی حوصلہ افزائی کررہی تھی اور انھیں کہہ رہی تھی کہ ’اس کے چہرے پر مکے مارو، اس کے چہرے پر لات مارو، اس کا چہرہ کو پکڑ لو‘۔گلڈ فورڈ کراؤن کورٹ میں چلائی جانے والی ویڈیو میں لڑکی کے بالوں کے بڑے بڑے گچھے جھڑتے ہوئے دکھائی دے رہے تھے کیونکہ اس کے بالوں کو بے دردی سے کھینچا گیا تھاپراسیکیوٹر چارلس لینگلی نے بتایا کہ سیاہ فام لڑکی کی آنکھ پر چوٹ لگی تھی، ایک گھٹنا چھلا ہوا تھا اور اس کے بال اس کی سڑ سے اکھڑ گئے تھے۔ ایک گروپ نے اس پر حملہ کیا تھاانھوں نے کہا کہ حملے میں واضح طور پر منصوبہ بندی کا عنصر شامل تھا جس میں خاتون کونرز کی آمد پہلے سے طے شدہ پلان کے مطابق لگتی تھی۔کونرز کو جان بوجھ کر کسی جرم کی حوصلہ افزائی یا مدد کرنے پر 20 ماہ کے لیے جیل بھیج دیا گیا ہے جبکہ اس کے لیے پانچ سال کی پابندی کا حکم بھی سنایا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں