0

پکتیکا پر مبینہ حملہ، افغان طالبان نے پاکستانی وفد کا دورہ منسوخ کردیا

اسلام آباد: افغان طالبان نے پکتیکا میں سرحد پار دہشت گردوں کے ٹھکانوں کو پاکستان کی جانب سے مبینہ طور پر نشانہ بنانے کے خلاف احتجاجاً پاکستانی فوج کے وفد کا قندھار کا دورہ منسوخ کر دیا ہے۔ پاکستان نے اس حملے یا اتوار کو پاکستانی وفد کے قندھار کے دورے کی منسوخی پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔ فوج کے میڈیا ونگ نے بھی ان دونوں معاملات میں کسی پیش رفت پر کوئی ردعمل ظاہر نہیں کیا۔طالبان نے بھی پکتیکا میں مبینہ پاکستانی حملے یا پاکستانی وفد کے دورہ پکتیکا کی منسوخی پر کوئی تبصرہ نہیں کیا۔ تاہم سفارتی ذرائع نے بتایا ہے کہ کالعدم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کے معاملے کو حل کرنے کے لیے درمیانی درجے کے افسران کا ایک وفد اتوار کو قندھار گیا تھا۔ ذرائع کے مطابق وفد نے قندھار کے گورنر اور افغان انٹیلی جنس سے ملاقات کی۔ وہ اس ٹیم کا بھی حصہ تھا جس نے پاکستان اور ٹی ٹی پی کے درمیان مذاکرات میں سہولت فراہم کی۔ کچھ افغان صحافیوں نے جمعہ کے روز اطلاع دی ہے کہ پاکستان نے ایک مخصوص ٹی ٹی پی دہشت گرد کو مارنے کے لیے پکتیکا میں حملہ کیا تھا۔ پاکستان نے ایسے کسی حملے کی تصدیق نہیں کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں