0

شاہین کو ہٹاکربابرکو دوبارہ کپتانی سونپنے پر شاہد آفریدی کا ردعمل

گزشتہ چند ہفتوں سے بابر اعظم کی بطور کپتان واپسی کی افواہوں کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ نے گزشتہ روز انہیں وائٹ بال ٹیم کا کپتان مقرر کر دیا ہے۔شاہین شاہ آفریدی کے سسر اور سابق کپتان شاہد خان آفریدی نے پی سی بی کی جانب سے بابر اعظم کو دوبارہ قومی ٹیم کا کپتان بنانے کے فیصلے پر حیرت کا اظہار کیا ہے۔بابر اعظم نے گزشتہ سال ون ڈے ورلڈ کپ کے بعد اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا جس کے بعد پی سی بی نے شان مسعود کو ٹیسٹ کپتان مقرر کیا تھا جب کہ شاہد آفریدی کے داماد فاسٹ بولر شاہین آفریدی نے مختصر ترین فارمیٹ میں کپتانی سنبھالی تھی۔ . تاہم بورڈ نے ون ڈے ٹیم کے لیے کسی کپتان کے نام کا اعلان نہیں کیا۔بابر اعظم کی واپسی کی افواہیں گزشتہ چند ہفتوں سے گردش کر رہی تھیں، پی سی بی نے اتوار کو اس کی تصدیق کرتے ہوئے اعلان کیا کہ سلیکشن کمیٹی کی متفقہ سفارش پر چیئرمین پی سی بی محسن نقوی نے بابر اعظم کو قومی کرکٹ ٹیم میں شامل کیا ہے۔ وائٹ بال (ODI اور T20) کو کپتان مقرر کیا گیا ہے۔تاہم شاہد آفریدی پی سی بی کی جانب سے بابر اعظم کو دوبارہ کپتان مقرر کرنے کے فیصلے سے مطمئن نظر نہیں آتے۔ان کا کہنا ہے کہ وکٹ کیپر بلے باز محمد رضوان کا بہتر متبادل ہوتا تاہم سابق آل راؤنڈر نے بابر اعظم کو کپتانی سنبھالنے پر مبارکباد دی ہے۔شاہین شاہ آفریدی کی پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) میں لاہور قلندرز کی موثر قیادت کرنے میں ناکامی اور ان کی اپنی متضاد کارکردگی فیصلے کو متاثر کرنے والے اہم عوامل تھے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ چیئرمین پی سی بی نے سلیکٹرز پر واضح کیا ہے کہ وہ فیصلہ کریں کہ کپتان کسے ہونا چاہیے اور یہ بھی کہا کہ مستقبل میں قومی ٹیم کی کارکردگی کی ذمہ داری وہ خود ہوں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں